جی ڈی پی کے تمام اعداد وشمار فرضی: سبرامنیم سوامی

دہلی:۔بی جے پی لیڈر اور راجیہ سبھا کے رکن سبرامنیم سوامی نے اپنی ہی پارٹی کے خلاف محاذکھول دیا ہے۔ انہوں نے ایک بار پھر نریندرمودی سرکار پر زبانی حملہ بولا ہے۔ انہوں نے مرکزی سرکار پر سنسنی خیزا لزام لگایا ہے کہ سرکار نے سینٹرل اسٹیسٹیک آرگنائزیشن (سی ایس او) کے افسران پر بہتر اقتصادی اعدادوشمار دینے کےلئے دباﺅ بنایا تھا۔ جس سے یہ دکھایا جاسکے کہ نوٹ بندی کا اقتصادی نظام اورجی ڈی پی پر منفی اثر نہیں پڑا ہے۔ انہوں نے ان اعداد اعداد وشمار کو فرضی بتایا۔ سوامی کے اس الزام سے مودی سرکار کی مشکلات میں اضافہ ہوسکتا ہے۔ سبرامنیم سوامی نے احمد آباد میں چارٹرڈاکاﺅنٹنٹ کے ایک اجلاس میں خطاب کرتے ہوئے مرکزی سرکار پر سی ایس او کے افسران پر اچھے اعداد وشمار پیش کرنے کےلئے دباﺅ ڈالنے کا الزام لگایا۔ انہوں نے کہا مہربانی کرکے جی ڈی پی کے سہ ماہی اعداد وشمار پر نہ جائیں وہ سب فرضی ہیں ۔ یہ بات میں آپ کو کہہ رہاہوں ، کیونکہ میرے والد نے سی ایس او قائم کیا تھا۔ حال ہی میں میں مرکزی وزیر سدانند گوڑا کے ساتھ وہاں گیا تھا۔ انہوں نے سی ایس او افسرا ن کو حکم دیا کیونکہ نوٹ بندی پر اعداد وشمار پیش کرنے کا دباﺅ تھا۔ اس لئے وہ جی ڈی پی کے اےسے اعداد وشمار جاری کررہے ہیں جس سے یہ پتہ چل سکے کہ نوٹ بندی کا کوئی اثر نہیں پڑا ۔ میں گھبراہٹ محسوس کررہا ہوں کیونکہ مجھے علم ہے کہ اس کا اثر پڑا ہے۔ میں نے سی ایس او کے ڈائریکٹر سے پوچھا تھا کہ آپ نے اس سہ ماہی میں جی ڈی پی کے اعداد وشمار کا اندازہ کیسے لگایا تھا جب نوٹ بندی کا فیصلہ (نومبر2016)کو لیا گیا تھا؟ اور آپ نے اقتصادی سروے کی رپورٹ 2017 میں شائع کی ۔ بقول سوامی سی ایس او ڈائریکٹر نے بتایا کہ وہ کیا کرسکتے ہیں ؟ وہ دباﺅ میں تھے۔ ان سے اعداد وشمار مانگے گئے اور انہوں نے دے دےے۔ سوامی نے بتایا کہ اےسے میں سہ ماہی اعداد وشمار پر بھروسہ نہ کریں ۔ سوامی نے ریٹنگ ایجنسیوں کی رپورٹ پر بھی سوال اٹھاتے ہوئے کہا ان موڈی اور فچ کی رپورٹوں پر یقین نہ کیجئے۔ آپ انہیںپیسہ دے کر کسی بھی طرح کی رپورٹ شائع کروا سکتے ہیں ۔ واضح رہے کہ مودی نے حال ہی میں ہندوستان کی کریڈیٹ ریٹنگ بڑھائی تھی۔

About Abdul Rehman

x

Check Also

جے این یو اسٹوڈنٹ نجیب کا نہیں ملا سراغ ، بند کرسکتے ہیں جانچ: سی بی آئی

دہلی :۔ سی بی آئی نے جمعرات کو دہلی ہائی کورٹ کو اشارہ دیا ہے ...