شیموگہ کانگریس دفتر میں زبردست ڈرامہ

ٹکٹ دیں ٹکٹ نہ دیں کے نعروں سے گونج اٹھا کانگریس دفتر
شیموگہ:شیموگہ ضلع کانگریس کے دفتر میں آج زبردست ڈرامہ دیکھنے کاملا،جس میں کانگریس کی اسمبلی ٹکٹ کیلئے کئی دعویداروں کے حامیوںاور موجودہ رکن اسمبلی کے مخالفین کی بڑ ی تعداد نے ایک طرح سے پریڈ نکالا۔آج کانگر یس دفتر کو کے پی سی سی کے ابزرور بی این چندرپا اور منجوناتھ کونور انتخابی تیاریوں کا جائزہ لینے کیلئے دورہ کیا۔ اس دوران ٹکٹ کے دعویداروں کے حامیوںنے اپنے اپنے لیڈروں کو ٹکٹ دینے کا مطالبہ کیا۔تیرتھ ہلی اور شکاری پور کے علاوہ تمام اسمبلی حلقوںکی ٹکٹ کیلئے لمبی فہرست ابزوروس کو سونپی گئی۔ صبح سے کانگریس دفتر کے بالمقابل مختلف لیڈروں کے حامیوں کی بڑی تعدا د موجود تھی۔ان حامیوں کے ہاتھوںمیں اپنے لیڈروںکی تصویر والے پلے کارڈ اور پوسٹرس موجود تھے۔شیموگہ اسمبلی حلقے کے رکن اسمبلی کے بی پرسنناکمار کو ٹکٹ نہ دینے والوں کی تعداد بھی بڑی تھی۔12 افراد پر مشتمل جو سنڈیکیٹ قائم کی گئی ہے،اس کے نمائندے ایل ستیانارائن،مختیاراحمد،ایچ ایم چندرشیکھر سمیت دیگر کانگریسی اراکین نے ابزرور منجوناتھ کونور اور چندرپا کو اس بات سے بآور کیا کہ موجودہ صورتحال کانگریس کیلئے نا خوشگوار ہے اور رکن اسمبلی کے بی پرسنناکمار کو ٹکٹ دینے سے ان کی شکست یقینی ہے،اس لئے کانگریس متبادل امیدوارکو ٹکٹ جاری کرے۔دریں اثناءکاڑا کے صدر سندریش نے اپنے لئے ٹکٹ کا مطالبہ کیا۔سندریش کے حامیوں اور رکن اسمبلی پرسنناکمارکے حامیوں کے درمیان کچھ وقت کیلئے ہنگامہ شروع ہو ا جسے پولیس نے قابومیں لایا۔آج کی جائزاتی نشست میں کے پی سی سی کے سکریٹری و شیموگہ ضلع انچارج آغاسلطان ،تیناسرینواس اور اسماعیل خان وغیرہ موجود تھے۔

About Abdul Rehman

x

Check Also

پیسوں سے عوام کا دل جیتنا مشکل ہے:کیمانے رتناکر

شیموگہ:پیسوںکے بل بوتے پر عوام کو جیتنے کاخیال عام ہوتا جارہا ہے،لیکن تیرتھ ہلی جیسے ...