لاشوں کی سیاست کررہی بی جے پی کے خلاف پی یف آئی کا احتجاج

شیموگہ :ریاست میں بی جے پی لاشوں کی سیاست کرتے ہوئے آنے والے انتخابات میں فائدہ حاصل کرنے کی کوشش کررہی ہے۔اس بات کا الزام لگاتے ہوئے آج پاپولر فرنٹ آف انڈیا کی جانب سے ریاست گیر سطح پر احتجاج منعقدکیا گیا ،جس کے تحت شیموگہ میں بھی پی ایف آئی کے کارکنوںنے ڈپٹی کمشنر دفتر کے بالمقابل احتجاجی دھرنا دیا۔اس دوران احتجاجیوںنے ریاستی حکومت کوپیش کردہ میمورنڈم میں کہا ہے کہ کرناٹک میںامسال ہونے والے اسمبلی انتخابات کے مدنظر بی جے پی ریاست میںنفرت کی سیاست کو فروغ دیکر فرقہ وارانہ فسادات کرواکر کسی بھی طرح اقتدار پر قابض ہونا چاہتی ہے۔ ریاست کے تمام سیکولر پارٹیوں ، ریاست کے دانشوران اور عوام سے اپیل کرتے ہوئے کہا ہے کہ وہ بی جے پی اور سنگھ پریوار کی نفرت کی سیاست کو متحد ہوکر ناکام کریں۔ ریاست کرناٹک میں فرقہ وارانہ ذہنیت رکھنے والی بی جے پی پارٹی اور سنگھ پریوار تنظیمیں اپنے اشتعال انگیز بیانات، قتل، عصمت ریزی اور غنڈہ گردی کے ذریعے ریاست کے امن و امان میں خلل ڈالنے کی کوشش کررہی ہیں۔ پی ایف آئی نے اس بات کی طرف خصوصی نشاندہی کرتے ہوئے کہا کہ کرناٹک کے عوام اس بات سے اچھی طرح واقف ہیں کہ گزشتہ چار سال سے کس طرح سنگھ پریوار اور بی جے پی پارٹی ریاست کرناٹک کے تقریبا ًتمام اضلاع میں مسلمانوں اور دلتوںپر حملے ، مذہبی مقامات پر حملے ، اشتعال انگیز تقاریر اور بیانات، قتل اور عوامی اور سرکاری املاک کو نقصان پہنچانا ، بابا بڈھن گری درگاہ شریف کی بے حرمتی، بی جے پی کے خلاف آواز اٹھانے والی صحافی اور سماجی کارکن گوری لنکیش کا قتل، اس سے قبل ایم ایم کلبرگی کا قتل ،دکشن کنڑااور دیگر اضلاع میں بڑے پیمانے پر فرقہ وارانہ فسادات کروانے کی کوشش اور عوا م کو ذات پات اور مذہب کی بنیاد پر تقسیم کرکے کسی ایک خاص طبقے کا ووٹ حاصل کرکے اقتدار پر قابض ہونا چاہتی ہے۔
سنگھ پریوار اور اس کی ذیلی تنظیمیں خاص طور پر مسلمانوں اور دلتوں کو نشانہ بنا رہی ہیں اور عوام میں پھوٹ ڈال کر اور ریاست کی پر امن ماحول کو بگاڑ کر اپنی سیاسی مفادات حاصل کرنا چاہتی ہے۔ امن پسند عوام کی یہ ذمہ داری ہے کہ ریاست کرناٹک میں امن و امان کے قیام کے لیے جدوجہد کریں اور فرقہ وارانہ سیاست کرکے ریاست کے امن و امان میں خلل ڈالنے اور ترقی میں رکاوٹیں پیدا کرنے والے فرقہ پرست عناصر کے ناپاک ارادوں کو متحد ہوکر ناکام کریں۔ تنظیم نے میڈیا سے بھی اپیل کی ہے کہ وہ ریاست کرناٹک کے عوام کے مفاد کے خاطر اور اپنی صحافتی ذمہ داریوں کو مد نظر رکھتے ہوئے غلط خبریں شائع کرنے سے گریز کریں اور صحیح اور تحقیق شدہ خبروں کو عوام تک پہنچائیں۔پی یف آئی ریاستی حکومت سے مطالبہ کرتی ہے کہ ہے کہ وہ ریاست کرناٹک میں نفرت کی سیاست کرنے والے اور عوام میں مذہبی منافرت پھیلا کر ووٹ بٹورنے کی کوشش کرنے والے اور ریاست کے امن و امان میں خلل ڈالنے والے فرقہ پرست عناصر کے خلاف سخت سے سخت کارروائی کرے تاکہ ریاست کرناٹک کے عوام خوف سے آزاد ہوکر امن و امان کے ساتھ اپنی زندگی گذارسکیں اور ریاست کرناٹک کی مجموعی ترقی ہوسکے ۔احتجاج میں ضلعی صدر شاہد خان ، عبدالمجیب ، محمدوثیق، سلیم خان ،ایم ڈی صادق وغیرہ موجود تھے۔

About Abdul Rehman

x

Check Also

کیوں ہے رکن اسمبلی سے بَیر؟ایم ایل اے کی باغی ٹیم کے سرپرست مختاراحمد نے کیا اظہار

شیموگہ:۔رکن اسمبلی پرسنناکمار کو آنے والے اسمبلی انتخابات میں ٹکٹ نہ دی جائے اس کیلئے ...