Chinese President Xi Jinping (R) and Indian Prime Minister Narendra Modi (L) shake hand beforethe group photo session of Dialogue of Emerging Market and Developing Countries, in sideline of 2017 BRICS Summit in Xiamen, Fujian province in China,, September 5th 2017. REUTERS/Kenzaburo Fukuhara/Pool - RC16F5A2BF60

ہندوستان اور چین کا فیصلہ:ڈوکلام جیسے واقعات مستقبل میں نہ ہونگے

شیامین:۔۔ ڈوکلام تنازع ختم ہونے کے بعد وزیر اعظم نریندر مودی اور چین کے صدر شی جن پنگ کے درمیان آج یہاں مثبت ماحول میں ملاقات ہوئی جس میں باہمی تعلقات کو ’مستحکم‘ اور بہتر‘ رکھنے کی خاطر سرحد پر امن ، حالات کو جوں کا توں قائم رکھنے اور باہمی اعتماد کو بڑھانے پر زور دیا گیا۔ نویں برکس سربراہ اجلاس میں شرکت کرنے کےلئے چین کے تین دن کے دورے پر آنے والے مودی کے دورے کے آخری مرحلے میں میزبان ملک کے صدر کے ساتھ ایک گھنٹے سے زائد وقت تک جاری رہنے والی ملاقات میں برکس سے متعلق موضوعات اور باہمی مسائل پر بامعنی بات چیت ہوئی۔ ملاقات کے بعد، خارجہ سکریٹری ایس جے شنکر نے صحافیوں کو بتایا کہ مذاکرات میں دونوں ممالک کے درمیان تعلقات میں بہتری اور استحکام پر توجہ مرکوز رہی تھی اور یہ بہت مثبت اور خوشگوار رہی۔انہوں نے باہمی مسائل پر بات چیت کی تفصیلات پیش کرتے ہوئے کہا کہ دونوں رہنماو¿ں کے درمیان وسیع بات چیت ہوئی اور بات چیت آستانہ میں ہونے والی رضامندی کے مطابق تھی کہ دونوں ممالک کے درمیان اختلافات تصادم کی وجہ نہ بنیں۔ میٹنگ میں اتفاق ہوا کہ ہندوستان اور چین کے رشتوں میں استحکام اور امن برقرار رہنا چاہئے۔ یہ بھی محسوس کیا گیا کہ رشتوں کے فروغ کےلئے سرحد پر امن و استحکام پیشگی شرط ہے۔ دونوں ممالک نے سرحد پر باہمی اعتماد کو بڑھانے کےلئے مزید اقدامات پر زور دیا اور کہا کہ اگر کوئی اختلاف ہے تو اسے باہمی احترام کے ساتھ حل کیا جانا چاہئے۔

About Abdul Rehman

Leave a Reply

x

Check Also

چالیس زبانوں میں فوری ترجمہ کرنے والا ہیڈفون

واشنگٹن:۔امریکی شہر سان فرانسسکو میں ایک تقریب میں ٹیکنالوجی کمپنی گوگل نے ایسا ہیڈفون لانچ ...